علی آباد ہنزہ میں دھرنا پر امن طریقے سےاختتام پزیر، قائدین کے درمیان مذاکرات جاری

علی آباد ہنزہ میں دھرنا پر امن طریقے سےاختتام پزیر، قائدین کے درمیان مذاکرات جاری

2 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

(پامیر ٹائمز رپورٹ) ضلع ہنزہ نگر کے مرکزی شہر علی آباد میں میں 2نومبر کو اس وقت حالات کشیدہ ہوگئے جب ضلعی انتظامیہ کی نااہلی کی وجہ سے سات محرم الحرام کا جلوس اپنے روایتی اختتامی مقام ڈورکھن کراس کرکے مسجد علی علی آباد پہنچا ۔واقعے کی اطلاع ملتے ہی علی آباد اور گرد نواح سے ہزاروں کے تعداد میں نوجوانوں اور عوام نے ضلعی حکومت کی نااہلی کے خلاف کالج روڈ پر پر امن دھرنا دیا ۔پر امن دھرنے کا یہ سلسلہ 3 نومبر کو بھی جاری رہا جس میں سپیکر قانون ساز اسمبلی وزیر بیگ ،صدر اسماعیلی کونسل ہنزہ اور دیگر عوامی و سیاسی قائدین بھی شریک ہوے۔

دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین  نے ڈپٹی کمشنر ہنزہ ۔نگر،اسسٹنٹ کمشنر ہنزہ اور ایس پی ضلع ہنزہ نگر کو اس تمام صورتحال کا زمہ دار ٹھراتے ہوئے ان کی معطلی اور واقعے میں ملوث افراد کے خلاف مقدمہ کا مطالبہ کیا ۔

مقررین کا مزید کہنا تھا کہ محرم الحرام کے ماتمی جلوسوں کے حوالے سے روایتی راستے مقرر ہیں اور اس سلسلے میں واضع طور پر دونوں کمیونٹیز کے درمیان ماضی میں معاہدے بھی  ہوچکے ہیں اور گزشتہ کئی سالوں سے ان معاہدوں پر باقائدہ عمل ہوتا رہا ہے لیکن کل کا واقعہ مقامی انتظامیہ کی طرف سے ان معاہدوں کی خلاف ورزی اور علاقے میں بد امنی پھیلانے کی سازش ہے۔

دوران دھرنا ممبر گلگت بلتستان اسمبلی مرزا حسین ،وزیر خزانہ محمد علی اختر اور انجمن امامیہ ٹرسٹ کے صدر مستان علی نے بھی دھرنے میں شامل ہوکر عوام سے ہمدردی ظاہر کی اور ان سے پرامن رہنے کی اپیل کی اور زمہ داروں کے خلاف قانونی کاروائی کرنے اور تحقیقات کی یقین دھانی کروائی.  اور اس معاملے کو شیعہ اور اسماعیلی کمیونٹی کو آپس میں لڑانے کی سازش قرار دیتے ہوے لوگوں سے پر امن رہنے کی اپیل کی۔

دھرنے میں نوجوانوں کی طرف سے ایک قرار داد بھی پیش کیا گیا جس میں مقامی انتظامیہ کے اعلی حکام کا تبادلہ اور انکے خلاف قانونی کاروائی ،محرم الحرام کے جلوسوں کی روایتی راستوں کی پابندی کی یقین دھانی اور لاوڈ اسپیکر سے نفرت انگیز تقاریر پر پابندی کا مطالبہ کیا گیا ۔

سکریٹری ہوم گلگت بلتستان اور اعلی حکام کی ہنزہ آمد کے بعد سپیکر قانون ساز اسمبلی گلگت بلتستان اور اسماعیلی کونسل ہنزہ کی زیر قیادت وفد کے ساتھ ملاقات جاری ہے جبکہ پر امن دھرنے کو سیاسی قیادت اور اسماعیلی کونسل کی اپیل پر ختم کیا گیا ہے.

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

لکھاری کے بارے میں

پامیر ٹائمز

pamir.times@gmail.com

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔