گلگت بلتستان سپریم اپیلیٹ کورٹ کے ججوں کی مدت ملازمت بڑھانے کی درخواست مسترد

گلگت بلتستان سپریم اپیلیٹ کورٹ کے ججوں کی مدت ملازمت بڑھانے کی درخواست مسترد

3 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

اسلام آباد (ویب ڈیسک) سپریم کورٹ نے گلگت بلتستان کی اعلی عدلیہ کے ججوں کی مدت ملازمت میں توسیع کی درخواست مسترد کردی۔

جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے گلگت بلتستان سپریم اپیلٹ کورٹ کے 2 حاضر سروس ججوں کی درخواست پر سماعت کی۔ دونوں ججوں نے گلگت بلتستان سپریم اپیلٹ کورٹ کے جج صاحبان کی عمر 65 سال کرنے کی درخواست کی تھی۔

ان کا موقف تھا کہ جسٹس جلال الدین 63 سال اور جسٹس مظفرعلی 61 سال کی عمر میں ریٹائر ہوں گے۔ صرف 3 سال کے لیے جج بننا انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیے کہ 61 یا 63 سال کی عمر میں ریٹائر ہونا انسانی حقوق کی خلاف ورزی کا معاملہ نہیں، قواعد وضوابط موجود ہیں، خود ریٹائرمنٹ کی عمرکا تعین نہیں کیا جاسکتا۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔