دلائل ختم، لڑائی شروع، گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی کے اراکین ٹیکس نفاذ کے معاملے پر الجھ گئے

دلائل ختم، لڑائی شروع، گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی کے اراکین ٹیکس نفاذ کے معاملے پر الجھ گئے

3 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

 گلگت: ٹیکس نفاذ بارے بریفنگ ہنگامہ آرائی کی نذر ہوگیا۔ اپوزیشن کو رام کرنے کی کوشش سرکار کے گلے پڑ گئی۔ کیپٹن (ر) شفیع اور ڈاکٹر محمد اقبال کی تلخ کلامی. مشتعل جانباز خان نے چائے کی پیالی نواز خان ناجی پر دے مارا۔

جمعرات کو وزیر اعلی گلگت بلتستان کے حکم پر اپوزیشن اراکین کو نفاذ ٹیکس کے حوالے سے اعتماد میں لینے کے لیے قانون ساز اسمبلی کے کانفرنس ہال میں بریفنگ کا اہتمام کیا گیا تھا۔ اس دوران اسلامی تحریک کے کیپٹن شفیع اور صوبائی وزیر ڈاکٹر اقبال کے درمیان تلخ کلامی ہوئی۔  حاجی جانباز نے ڈاکٹر اقبال کی حمایت کی تو نواز خان ناجی کیپٹن (ر) شفیع کا ساتھ دینے لگے۔ اس دوران وزیر خوراک حاجی جانباز خان نے مشتعل ہو کر نواز خان ناجی پر چائے کا کپ دے مارا، جو اتفاق سے ناجی کو نہیں لگا۔

بریفنگ ہنگامہ آرائی کا شکار ہوگئی اور گلگت بلتستان میں وفاقی حکومت کی طرف سے نافذ کردہ “غیر قانونی ٹیکس” کے دفاع میں منعقدہ بریفنگ صوبائی سرکار کے گلے پڑ گئی۔
اینٹی ٹیکس مومنٹ کی احتجاجی تحریک شروع ہونے کے بعد سے صوبائی حکومت شدید دباؤ کا شکار ہے، اور اس معاملے پرعوامی راے بھی ان کے حق میں نہیں ہے۔ دوسری طرف قانون ساز اسمبلی میں اپوزیشن جماعتوں نے بھی ٹیکسوں کے مسلے پر سرکار کو آڈے ہاتھوں لینے کی تیاریاں مکمل کرلی ہیں۔ آنے والے دنوں میں ٹیکس مخالف تحریک زور پکڑ سکتی ہے۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔