وزیر اعلیٰ کی طرف سے مفت کتابوں کا اعلان ، ضلع ہنزہ اور نگر کے ہزاروں طلباء و طالبات بغیر کتابوں کے اسکول جانے پر مجبور

وزیر اعلیٰ کی طرف سے مفت کتابوں کا اعلان ، ضلع ہنزہ اور نگر کے ہزاروں طلباء و طالبات بغیر کتابوں کے اسکول جانے پر مجبور

4 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

ہنزہ ( اجلال حسین) ضلع ہنزہ اور نگر کے ہزاروں طلباء و طالبات بغیر کتابوں کے گزشتہ ماہ سے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان کا کیا ہو ا وعدہ پورا نہ ہو سکا۔ ۔۔۔ گلگت بلتستان کے وزیر اعلیٰ حافظ حافیظ الرحمن کاسرکاری سکولوں کے طلباء سے کیا ہوا وعدہ پورا نہ ہو سکا، نہ صرف ضلع ہنزہ اور نگر کے طلباء بلکہ گلگت بلتستان کے دیگر اضلاع کے سرکار ی سکولوں میں زیر تعلیم طلبہ بغیر کتابوں کے سکول جانے پر مجبور ہے۔ وزیر اعلی نے سرکاری سکولوں میں زیر تعلیم طلبہ و طالبات کے لئے مفت کتابوں کا اعلان کیا تھا جس کے لئے طلبہ منتظر ہیں۔ گزشتہ ماہ 10فرروی سے تعلیمی سال شروع ہو چکا ہے مگر بغیر کتابوں کے طلبہ سکولوں میں تعلیم لینے پر مجبور ہیں۔ اس موقع پر طلباء اور اساتذہ نے گزشتہ روز میڈ یا کے ساتھ خصوصی گفتگو میں کہا کہ گزشتہ دو سے تین ہفتوں سے طلباء بغیر کتابوں کے سکولوں میں جاتے ہیں جس کی وجہ سے نہ صرف والدین پر یشان ہے بلکہ طلباء بھی اس سے بہت پریشان ہے۔ رواں سال کی نصابی سرگرمی تاخیر سے شروع ہو رہا ہیں جس کی وجہ سے دیگر سکولوں میں زیر تعلیم طلباء کے مقابلے میں تعلیمی میدان میں دشواری کا سامان کر نا پڑے گا۔ والدین ، طلبہ اور سکول اساتذہ نے وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حافیظ الرحمن اور محکمہ تعلیم گلگت بلتستان سے پر زورمطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ نصابی سرگرمیوں کی کتابیں طلبہ کو دیا جائے بصورت دیگر آئندہ انے والے نونہالوں کا مستقبل خطرے میں پڑنے کا امکان ہیں۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔