دیو سائی واقعی دنیا کا ایک عجوبہ ہے

دیو سائی واقعی دنیا کا ایک عجوبہ ہے

تحریر: شمس الحق قمر شمالی علاقہ جات اور موجود گلگت بلتسان زمانہ قدیم سے ملکی اور غیر ملکی سیاحوں کی دلچسپی کا مرکز رہا ہے ۔ یہاں کے سر بہ فلک پہاڑی چوٹیاں ، چاندی کی مانند چمکتے گلیشئر اورجمے ہوئے برفانی تودوں سے چھاج اُمنڈتے چشمے ، انہی چشموں...

Read more
فراز ، باد شائے رقص

فراز ، باد شائے رقص

شمس الحق قمر ؔ رقص کو بدن کی شاعری کہا جاتا ہے ۔ شاعری تخیّل کی اُن پُر پیچ راستوں کی مسافت کا نام ہے جہاں شاعر ماورائے عقل انکشافات سے اپنیہمراہیوں کو وادی حیرت کا اسیر بنا کے رکھدیتا /دیتی ہے ۔شاعری کوشش سے نہیں کی جاتی بلکہ یہ...

Read more
بے بال و پر پرندہ

بے بال و پر پرندہ

ہم ، میں اور میرے ایک دوست، ساتھ بیٹھ کر انیمل پلینٹ چنل دیکھ رہے تھے ۔ صورت حال یہ تھی کہ ایک جنگل میں بے شمار ہرن چوکڑیاں بھرتے اِدھر سے اُدھر اور اُدھر سے اِدھر بھاگے جا رہے تھے ۔ ہرنوں کی معصومیت اور پھرُتی دعوت نظارہ دے...

Read more
کل کے خطرناک کل کا ذمہ دار کون ہے ؟

کل کے خطرناک کل کا ذمہ دار کون ہے ؟

غالبؔ فرماتے ہیں کہ ؂ بس کہ ہوں غالب ؔ اسیری میں بھی آتش زیر پا موئے آتش دیدہ ہے حلقہ میری زنجیر کا آیئے سب سے پہلے اس شعر کی تشریح پر نظر دوڑاتے ہیں ۔ بنیادی طور پر غالبؔ قانون کے احترام کی بات کرتے ہیں ۔ غالبجرم...

Read more

خاک میں کیا صورتیں ہوں گی کہ پہناں ہو گئیں

مرحوم اللہ داد کی زندگی اور اپنے زمانے کے لوگوں سے آپ کی محبت کی داستان ، شجاعت علی بہادر صاحب کے معتبر فیس بک پیج میں چھپا تو نے بھی اپنی یادداشت کوکریدا ۔ اس سے پہلے کہ میں شجاعت علی بہادر کی تحریر کا ترجمہ اور مرحوم کے...

Read more
بے صدا ہو جائے گا یہ ساز ہستی ایک دن

بے صدا ہو جائے گا یہ ساز ہستی ایک دن

شمس الحق قمر ؔ گلگت ہاہاہاہاہا ۔۔۔۔ کیا مزے کا آدمی تھا۔ فون اٹھاتے ہی برس پڑے ۔ ہم نے اپنے دل میں کہا کہ ؂ جتنا غصے سے تم برستے ہو تم پہ اُتنا نکھار آتا ہے ۔ برسنے والا میرے قریبی دوستوں میں سے نہیں تھا البتہ اتنا...

Read more
کہتے ہیں جس کو عشق خلل ہے دماغ کا

کہتے ہیں جس کو عشق خلل ہے دماغ کا

شمس الحق قمر ؔ کتاب بینی کے دوران بعض ایسے جملے درآتے ہیں جن پر پڑھنے والا / والی ہزار بار ہزار بارسوچنے پر مجبور ہوتا /ہوتی ہے ۔ ہندوستان کے مشہور صوفی ،گورو رجنیش کے خطبات پڑھتے ہوئے ایسا ہی جملہ پڑھنے کو ملا خطبات کے مجموعے ’’ مراقبے...

Read more
میرے روزنامچے کے اوراق سے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ صلاح الدین صالح  قطرے سے دجلہ بہاتے ہیں

میرے روزنامچے کے اوراق سے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ صلاح الدین صالح قطرے سے دجلہ بہاتے ہیں

 شمس الحق قمرؔ بونی ، حال گلگت یاد نہیں کونسا سن تھا کہ چترال کے ایک مقامی ہوٹل کے سبزہ زار میں صلاح الدین صالح ؔ نے بھولنے والے محبوب کو انوکھے انداز سے یاد کیا ، گلہ شکوہ کیا وہ بھی دعائیہ کلمات سے، حسن ادا اتنا بے مثال...

Read more
دیوانوں کی باتیں ۔۔۔۔۔۔۔۔ہم پورے خاندان کے ساتھ مل بیٹھ کے ٹی وی دیکھتے ہیں

دیوانوں کی باتیں ۔۔۔۔۔۔۔۔ہم پورے خاندان کے ساتھ مل بیٹھ کے ٹی وی دیکھتے ہیں

تحریر : شمس الحق قمرؔ بونی ۔ حال گلگت الف: میں اس کو ایک لَپّڑ ماروں نا تو یہ اُلٹا ہو جائے گا I tell you ۔۔۔ ب: ابے لپَّڑ کے بچے ! لپڑ میں ماروں گا ہاں ۔۔۔ تمیز سے بول۔ پہلے بھی تیرا منہ کالاتھا اب میں اور...

Read more
حوض کے مینڈک کی کُل کائنات

حوض کے مینڈک کی کُل کائنات

تحریر: شمس الحق قمر ؔ بونی ، حال گلگت دوسری دفعہ سرتوڑ کوشش کے بعد میٹرک کا امتحان غیر یقینی طور پر سیکنڈ دویژن میں پاس کیا یہ ۱۹۸۵ ء کا سن تھا۔ عربی کے پرچے میں زیر زبر کی بوچھاڑ کر دی تھی شاید اُسی وجہ سے سو نمبروں...

Read more