گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی کومے میں ہے، آخری سانسیں لے رہی ہے: آمنہ انصاری

گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی کومے میں ہے، آخری سانسیں لے رہی ہے: آمنہ انصاری

10 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+
گانچھے (محمد علی عالم) وزیر علیٰ گلگت بلتستان کی اعلان پر عمل درآمدکرانے کے لئے تمام سرکاری محکموں کے سب انجینئرز بھی میدان میں آ گئے۔ ان کا کہنا ہے کہ ہم دوسال تک خاموشی سے انتظار کرتے رہے مگر اب ہم خاموش نہیں رہیں گے۔ ہم میدان میں نکلاہے اپنا حق لے کے ہی رہیں گے۔ گانچھے سب انجینئر ز کے وفد نے رکن اسمبلی آمنہ انصاری ،سابق مشیر تعمیرات ابراہیم ثنائی اور میجر(ر) محمد امین سے ملاقات کر کے اپنا مسائل سے آگا ہ کیا ۔
amina-ansariاس موقع پر رکن اسمبلی آمنہ انصاری نے کہاکہ اس وقت صوبائی اسمبلی کومے میں ہے اسمبلی آخری سانس لے رہی ہے۔ صرف سب انجینئر ز نہیں بلکہ تمام سرکاری اداروں کے ملازمین احتجاج اور دھرنے پر ہے اور ہر کوئی اپنے طاقت سے اپنا حق حاصل کر رہے ہیں جو صوبائی حکومت کی نااہلی منہ بولتا ثبوت ہے۔اداروں میں ملازمین کی احتجاج اور دھرنے سے عوام سخت متاثر ہیں مگر بدقسمتی سے حکومت کو اس کا احساس نہیں ہے جب اداروں کے ملازمین کو سہولت ملے گا تو اس کا فائدہ خودبخود عوام کو ہوتاہے انہوں نے کہا کہ صوبائی اسمبلی کے اپوزیشن بہت کمزوراور ناکام ہے اسمبلی میں حکومت سے زیادہ اپوزیشن کو مظبوط ہونا چاہئے کیونکہ حکومت کے ہر اچھے اور بُرے کام کے نگرانی کرنا اپوزیشن کا کام ہوتا ہے مگر وہ ہو نہیں رہا ہے اس لئے حکومت اپنے من میں جو آتا ہے کر رہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ چیف سیکرٹری جی بی صرف اخبارات میں بیان دینے کی بجا ئے عملی کام بھی کریں بڑے بڑے دعوؤں کو چھوڑ کر ملازمیں کی مسائل کو ترجیح بنیادوں پر حل کریں۔ سابق چیف سیکرٹریز کی طرح صر ف اپنے پرموشن لے کر واپس جانے کی بجا ئے گلگت بلتستان کی عوام کے مسائل حل کریں اس موقع پر ابراہیم ثنائی نے کہا کہ تمام سیاسی رہنما ؤں کو اس وقت پارٹی سے ہٹ کر ان کی مسائل حل کرنے کے لئے کوشش کرنا چاہیے۔کسی بھی محکمے میں سب انجینئرزریڑھ کی ہڈی کے حیثیت رکھتے ہیں ۔ ان کا مطالبہ جائز ہے حکومت انکی کے مطالبات کو منظور کر کے ان کو اپ گریڈ کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم سے جتنا ہوتا ہے ہم کوشش کر یں گے ۔ اور صوبائی حکومت بھی سنجیدہ ہو کر احتجاج اور دھرنا دینے سے پہلے مطالبات حل کریں ۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔