تحصیل گوجال میں زائد المعیاد اور غیر معیاری اشیائے خوردو نوش کی کھلے عام فروخت جاری، انتظامیہ خاموش تماشائی

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

گوجال (ایس۔اے میر) تحصیل گوجال کے مختلف گاؤں میں بہت سے دوکانوں پر اس وقت غیر معیاری اور زائد المعیاد اشیاء دستیاب ہیں ۔جس میں زیادہ تر کھانے پینے کی اشیاء ہے لیکن آج تک انتظامیہ نے اس کا نوٹس نہیں لیا۔

unnamed (1)تفصیلات کے مطابق گلگت سے غیر معیاری اور زائد المعیاد اشیاء کو گاڈیوں میں بھر کر گوجال کے مختلف دوکانوں میں سپلائی کی جاتی ہے جس میں بسکٹ،مصالحہ جات، اچار، چاکلیٹ وغیرہ شامل ہے ۔ اس وقت تحصیل ہیڈ کوارٹر کے بہت سے دوکانوں میں ایسے بسکٹ اور دوسرے اشیاء دستیاب ہے جن کے اوپر پلاسٹک کی پیکنک نہیں ہے ۔ کیونکہ پلاسٹک کے اوپر اکسپائری تاریخ ہوتی ہے اس لیے وہ پلاسٹک اس سے اتار کر لاتے ہے اور سستے دام دوکانداروں کو فروخت کرتے ہے ۔

ایک دوکاندار نے کہا کہ ایک دفعہ ہم نے سپلائی کرنے والون سے بسکٹ نہیں خریدا تو انھوں نے وہ بسکٹ مفت میں ہمیں دے دیا ۔

یہ لالچ نے یا سازش یہ تو آنے والا وقت ہی بتا دے گا۔  لیکن یہ حقیقت ہے کہ اس وقت گوجال میں پیٹ کی بیماری ، ہاضمہ اور گلے کی بیماری عام ہے لیکن کسی کو اندازہ نہیں کہ ہمارے دوکاندار آج کل زہر بیج رہے ہیں۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments