آغا خان فاونڈیشن کینیڈا کے سربراہ اور اُن کی ٹیم نے چترال کا دورہ کیا

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

AKF2

چترال(بشیر حسین آزاد ) آغا خان فاونڈیشن کینیڈا کے چیف اور اُن کی ٹیم نے گذشتہ روز چترال کا دورہ کیا ۔ اے کے ایف پاکستان کے سی ای او اختر اقبال بھی اُن کے ہمراہ تھے ۔ وفد نے چترال کمیونٹی ڈویلپمنٹ نیٹ ورک کے آفس کا دورہ کیا ۔ اور سی سی ڈی این کے بورڈ آف ڈائریکٹرز سے ملاقات کی ۔ اس موقع پر چیر مین سی سی ڈی این محمد وزیر خان نے ادارے کے قیام ، اس کی کارکردگی مستقبل کی ترجیحات اور درپیش مسائل پر تفصیل سے روشنی ڈالی ۔ اور کہا ۔ کہ سی سی ڈی این چترال کے طول عرض میں پھیلے ہوئے مقامی معاون اداروں اور دیہی تنظیمات کا نمایندہ ادارہ ہے ۔ جو عوامی اشتراک سے علاقے کی تعمیرو ترقی ،لوگوں کی طرز زندگی میں تبدیلی ،پائیدار امن کے قیام اور روزگار کے مواقع پیدا کرنے کی کو ششوں میں مصروف ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ادارے کو ٹیکنکل پروفیشنل افراد کے ساتھ مالی مسائل کا مسلہ درپیش ہے ۔ لیکن لوگوں کی توقعات بہت زیادہ ہیں ۔ اگرچہ علاقہ پُر امن ہے ۔ تاہم امن کو ممکنہ خطرات درپیش ہیں ۔ جس کیلئے کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ سی سی ڈی این صوبائی حکومت سے گذشتہ دو سالوں سے ہر سطح پر روابط بڑھانے کی کوشش کر رہاہے ۔ جس میں بہت حد تک کامیابی ہوئی ہے ۔ انہوں نے بلدیاتی نمایندوں کی استعداد کار بڑھانے کیلئے مختلف تربیتی پروگرام کے انعقاد ، ایل ایس اوز کا بلدیاتی اداروں اور لائن ڈیپارٹمنٹ سے رابطہ کاری کو مضبوط بنانے ، ایڈوکیسی ،آمدنی کے ذرائع پیدا کرنے کے حوالے سے اقدامات اُٹھانے کیلئے تعاون کی ضرورت کا اظہار کیا ۔

اس موقع پر مہمان ٹیم کی طرف سے مختلف سوالات اُٹھائے گئے ۔ جن کے تفصیلی جوابات ڈاکٹر عنایت اللہ فیضی ،چیرمین سی سی ڈی این محمد وزیر خان اور چیرمین آئی سی ڈی پی شیر آغا نے دیے۔ ڈاکٹر فیضی نے کہا ۔ کہ مستقبل کے ترقیاتی منصوبوں کیلئے سی سی ڈی این کی خدمات حاصل کرنے کی ضرورت ہے ۔ تاکہ ادارے کو تقویت اور استحکام ملے ۔ اور کمیونٹی سے اُٹھنے والی تنظیمات کا اعتماد بڑھے۔

اے کے ایف کینیڈا کے چیف مائیکل نے چترال میں امن کے قیام لوگوں کے کردار کی تعریف کی ۔ اور کہا۔ کہ مستقبل میں امن کو درپیش ممکنہ خطرات کا اظہار کیا جارہا ہے ۔ اُن سے نمٹنے کے سلسلے میں تمام ایل ایس اوز کا اتفاق و اتحاد انتہائی اہمیت کی حامل ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ نیٹ ورک قائم رکھنا دنیا میں سب سے مشکل کام ہے ۔ لیکن سی سی ڈی این کی طرف سے نیٹ ورک کیلئے اقدامات اُٹھانا قابل تعریف ہے ۔ سی ای او اے کے ایف پاکستان اختر اقبال نے کہا ۔ کہ بلدیاتی الیکشن کے بعد بہت سارے مسائل حل ہونے کے امکانات ہیں ۔ کیونکہ نچلی سطح پر لوگوں کے مسائل زیر بحث آنے سے اُن کے حل کی راہیں نکل آئیں گی ۔ تاہم سی سی ڈی این کی ٹیم نے کہا ۔ کہ بلدیاتی نظام کے باوجود لوگوں کے مسائل کے حل کیلئے مقامی معاون اداروں اور چترال کمیونٹی ڈویلپمنٹ نیٹ ورک کا استحکام از حد ضروری ہے ۔ اے کے آر ایس پی کے شیرزاد علی حیدر اور منیجر فضل مالک بھی اس موقع پر موجود تھے ۔ 

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments