ایون کورو بازار میں واقع بیکری میں آگ لگنے سے 7دکانیں اور دوسٹور جل کر خاکستر

ایون کورو بازار میں واقع بیکری میں آگ لگنے سے 7دکانیں اور دوسٹور جل کر خاکستر

16 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

چترال (محکم الدین ) اتوار کی شام ایون کورو بازار میں واقع بیکری کی بھٹی میں بجلی کی شارٹ سرکٹ کی وجہ سے آگ بھڑک اُ ٹھی ۔ جس نے دیکھتے ہی دیکھتے بھٹی کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ۔ آگ کے شعلوں کی تپش سے وہاں موجود گیس سیلنڈر پھٹ گئے ۔ جس کے نتیجے میں آگ کئی دکانوں تک پھیل گیا ۔ آگ لگنے کی وجہ سے 7دکانیں اوردو سٹور جل کر خاکستر ہو گئے ۔ تاہم مقامی نوجوانوں نے جان پر کھیل کر بازار کے دیگر دکانوں کو آگ لگنے سے بچا لیا ۔

متاثرین میں ظفر الدین ،حبیب گل افغانی فرنیچرہاؤس ، سرفراز شاہ وٹرنری میڈیسن سٹور،جہانزیب جنرل سٹور، اعجاز سٹیشنری، میر حسن آٹا اینڈ سمینٹ سٹور اور رحمن موچی کی دکان اور دو سٹور شامل ہیں ۔

آگ لگنے سے لاکھوں کا نقصان ہوا ہے ۔ آگ لگتے ہی فائر بریگیڈ کو اطلاع دی گئی ۔ لیکن حسب روایت فائر بریگیڈ کا عملہ مقامی لوگوں کے ہاتھوں آگ بجھانے کے بعد جائے وقو عہ پر پہنچے جس سے لوگ شدید مشتعل ہو گئے ۔ اور عملے کے بعض ارکان و ڈرائیور کو مارا پیٹا ۔

اُن کا کہنا تھا کہ ایون میں آگ لگنے کے ایسے پندرہ بڑے واقعات ہوئے ۔ مگر ہر مرتبہ فائر بریگیڈ روایتی غفلت کا مظاہرہ کر رہا ہے ۔ اور مقامی لوگ آگ بجھانے کے بعد فائر بریگیڈ والے پہنچ جاتے ہیں ۔

انہوں نے اس موقع پر مطالبہ کیا ۔ کہ علاقہ ایون کی بہت بڑی آبادی ہے ۔ اس لئے اس کیلئے علیحدہ فائر بریگیڈ یونٹ قائم کیا جائے ۔ تاکہ آگ لگنے کی صورت میں فوری اقدامات کئے جا سکیں ۔ متاثرین نے میڈیا کے ذریعے حکومت سے مطالبہ کیا ۔ کہ اُن کی جمع پونجی آگ کی نذر ہو گئی ہیں ۔ اس لئے حکومت اُنہیں دوبارہ اپنے پاؤں پر کھڑا ہونے کیلئے مالی مدد کرے ۔ جائے وقوعہ پر ڈی ایس پی دروش ظفر احمد ، ایس ایچ او ایون محمد فتاح پولیس کے جوانوں کے ہمراہ موجود تھے ۔ پولیس کے جوانوں نے بھی امدادی کاموں میں حصہ لیا ۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔