بونی میں زیرتعمیرعمارت مکمل ہونے کے بعد ہسپتال میں جدید مشینری ،طبی آلات،جدید آپریشن تھیٹر،آرتھوپیڈک اورگائنی کے شعبے قائم کیے جائیں گے؍ایم پی اے سیدسردارحسین 

چترال(نذیرحسین شاہ نذیر)رکن صوبائی اسمبلی سیدسردارحسین شاہ نے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتا ل بونی کے توسیعی منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زیرتعمیرعمارت مکمل ہونے کے بعد ہسپتال میں جدید مشینری ،طبی آلات،جدید آپریشن تھیٹر،آرتھوپیڈک اورگائنی کے شعبے قائم کیے جائیں گے جہاں تحصیل مستوج اورملحقہ علاقوں کے لوگوں کو علاج معالجہ کی جدید اورمعیاری سہولتیں میسر آئیں گی اوریہ ہسپتال دکھی انسانیت کیلئے ایک مسیحا کا کردارادا کرے گا۔انہوں نے کہاکہ ملک کی 70سالہ تاریخ کا پہلا موقع ہے کہ سرکاری ہسپتالوں میں غریب مریضوں کو وہی ادویات مفت مل رہی ہیں جو اشرافیہ استعمال کرتی ہے اورہسپتالوں میں معیاری ادویات کی فراہمی پر اربوں روپے خرچ کیے جارہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتا ل بونی کوجدید طرز پر استوارکرنے اوراپ گریڈیشن کیلئے 450ملین روپے کے فنڈز جاری کردئیے گئے ہیں جس کے لئے اپرچترال کی عوام وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویزخٹک کے مشکورہیں جنہوں نے چترال کے پسماندگی اوردورافتادگی کوپیش نظررکھے کرکئی میگاپراجیکٹ پرکام شروع کرویاہے ۔انہوں نے کہاکہ میں صوبائی حکومت کامشکورہوں جس کام کے حوالے سے میں نے درخواست کی تھی جس کویقینی بنانے میں اُنہوں نے اہم کرداراداکی ہے میں حزب اختلاف میں ہونے کے باوجودیہاں کے پسماندگی کومدنظررکھتے ہوئے میرے ہرمطالبے کوعملی جامہ پہنایاہے۔ ساڑھے چارسال میں صوبائی حکومت نے چترال کے کئی ہسپتالوں میں سولرسسٹم لگوائے ہیں اورفی سولرسسٹم کی قیمت 7 لاکھ 50ہزارروپے ہے۔جس میں اپرچترال کے بی ایچ یونشکو،آرایس سی دراسن،پی ایچ یواویر،ٹی اایچ کیوبونی اوربی ایچ یو کوشٹ شامل ہیں اور مزیدہسپتالوں کے لئے بھی سولر سسٹم دیے جائینگے۔انہوں نے کہاکہ 19ڈسپنسریزکی منظوری بھی دی گئی ہے جوپیپلزورکس پروگرام کی ڈسپنسریاں تعطل کاشکارتھے جن کے لئے اسٹاف بھی دیاگیاہے۔انہوں نے کہاکہ اپرچترال میں تمام جاری ترقیاتی منصوبوں میں غیرضروری تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے ہدایات جاری کی ہیں کہ منصوبوں کی بروقت تکمیل کو یقینی بناتے ہوئے معیار کو بھی مدنظر رکھا جائے۔ا س موقع پرپاکستان تحریک انصاف کے پانچ چھ ورکروں وہاں آکرافتتاح کوناکام بنانے کی کوشش کی جس پرایم پی اے سردارحسین نے ان کوسمجھایاکہ علاقے میں ہرکام متعلقہ ایم پی اے مطالبے پراے ڈی پی میں شامل کیاجاتاہے اورہم وزیراعلیٰ کے مشکورہے کہ جن کے حکم پر ترقیاتی منصوبے دے جاتے ہیں چاہیے حزب اختلاف میں ہویاحزب اقتدارمیں وہ پارلیمنٹ کاحصہ ہوتاہے ۔پارلیمنٹ کے قانون کے تحت چلتے ہیں ان ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے میں بھی صوبائی حکومت کوخراج تحسین پیش کرتاہوں ۔جس کے بعدسب نے مل کرتختی کی نقاب کشائی کرکے نئی بنے والی تحصیل ہیڈکواٹرہسپتال بونی کاباقاعدہ افتتاح کیا ۔ا س موقع پر پاکستان پیپلزپارٹی اپرچترال کے صدرامیراللہ ،انفارمیشن سیکرٹری پرویزلال،مختارسنگین لال،رحمت سلام لال،وی سی ناظم بونی کرامت ،ظفراللہ پروازاوردیگر جیالوں نے ایم پی اے سردارحسین کی کارکردگی اورعوامی خدمات کوخراج تحسین پیش کیا۔ایم پی اے نے محکمہ سی اینڈڈبلیوکے ایکسین انجینئرمقبول اعظم ،سب انجینئر سب ڈویژن مستوج انجینئرسید ابراہم شاہ اورٹھیکہ دارآسمارخان کی کارکرداگی کوتسلی بخش قراردیتے ہوئے کہاکہ فرشتہ صفت انسان ہیں اورانکی پوری ٹیم درددل رکھتی ہے جو ایمانداری ،اخلاص اوربغیر کسی لالچ کے دکھی انسانیت کی خدمت میں مصروف ہے۔میری دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ اسے دن رات ترقی دے اوریہ اور زیادہ بہتر انداز میں انسانیت کی خدمت کرے۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments