گلگت: طویل لوڈ شیڈنگ کے خلاف کشروٹ میں احتجاج

گلگت ( رپورٹر ) گلگت شہر میں طویل لوڈ شیڈنگ کے ستائے کشروٹ کے عوام سڑکوں پر نکل آئے۔عوام نے کلمہ چوک پر احتجاج کر کے روڈ کو ہر طرح کی ٹریفک کے لئے بند کردیا۔ مشتعل عوام نے محکمہ برقیات کے خلاف نعرہ بازی اور ٹائر جلا کر احتجاج کیا۔

احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ میں آئے روز اضافہ ہو رہا ہے۔ محکمہ برقیات اور صوبائی حکومت خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں۔ بجلی نہ ہو نے سے کاروبار تباہ ہو چکی ہے، گھریلو کام متاثر ہے۔ طلباءوطالبات کے تعلیمی سرگرمیاں متاثر ہورہاہے۔

مظاہرین نے کہا کہ صوبائی حکومت نے الیکشن میں بلند بانگ دعوے کئے تھے۔ مگر اب تک صوبائی حکومت کی کارکردگی صفر ہے۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ اسپیشل لائنوں کے ذریعے وی آئی پی لوگوں کو بجلی دی جاتی ہے۔ غریب عوام بغیر بجلی اور بغیر پانی کے زندگی بسر کر رہےہیں۔ حکمرانوں کو عوام کے مشکلات کا کوئی فکر نہیں ہے۔

خطاب میں مقررین نے کہا کہ گلگت بلتستان میں پانی کی وافر مقدار موجود ہے لیکن حکمران اپنے جیب بھرنے کے لئے ندی نالوں میں بجلی گھر تعمیر کئے جارہے ہیں جو آئے روز خراب ہورہے ہیں۔ حکومت اگر بجلی کی لوڈ شیڈنگ ختم کرنے میں مخلص ہے تو ندی نالوں کی بجائے دریاؤں میں پاور ہاؤسس تعمیرکرے اور نئے پاور ہاؤس کی تعمیر کے لئے جلد از جلد ٹینڈر کئے جائیں۔

مظاہرین نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ گلگت شہر میں اسپیشل لائنوں اور اسپیشل ٹرانسفارمر کو ختم کرکے عوام کو بجلی مہیاء کی جائے بصورتِ دیگر مذید احتجاج پر مجبور ہو جائیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments