چترال: سب انجینئرز کا مطالبات منظور نہ ہونے کی صورت میں قلم چھوڑ ہڑتال کی دھمکی

چترال( شہریار بیگ سے) چترال کے مختلف محکموں سے تعلق رکھنے والے سب انجینئرز اپنی فریادیں لے کر چترال پریس کلب پہنچ گئے۔مطالبات منظور نہ ہونے کی صورت میں قلم چھوڑ ہڑتال کی دھمکی دے دی۔انجینئرز سید ضیاء الرحمن طورو کی قیادت میں محکمہ سی اینڈ ڈبلیو،محکمہ انہار ،محکمہ پبلک ہیلتھ،فنانس اور تحصیل میونسپل ایڈمنسٹریشن کے سب انجینئرزسیف الرحمن،سید عالم،محمد ولی شاہ،فرید احمد،سید لیاقت شاہ،محمد اسحاق،عبد الوکیل،ذین الاکبر،وقار خان۔اصف احمد اور فیاض اللہ نے چترال پریس کلب میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سب انجینئرز وہ محروم طبقہ ہیں کہ اُنہیں اب تک حکومت کی طرف سے کوئی مراعات میسر نہیں۔موجودہ صوبائی حکومت ملازمین کے مسائل بھر پور انداز سے حل کر رہی ہے۔مگر سب انجینئرز کے دو جائزمطالبات جو کہ سب انجینئرز کے سروس اسٹرکچر اور اپگریڈیشن سے متعلق ہے۔کی طرف کسی نے توجہ نہیں دی ہے۔اُنہوں نے کہا کہ صوبائی صدر ملک بشیر احمد کی ہدایت پر ہم نے اجلاس کا انعقاد کیا جس میں تمام سب انجینئرز نے شرکت کی ۔اُنہوں نے کہا کہ ہم صوبائی سطح پر اپنا احتجاج ریکارڈ کرانے بنی گالہ جاکر دھرنا دینگے اور 16مئی سے قلم چھوڑ ہڑتال کرکے تمام کام بند کردیں گے اور مطالبات کی منظوری تک ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments