ضلع شگر میں یوم آزادی جوش و خروش سےمنایاگیا، تقریبات اور ریلیز منعقد

ضلع شگر میں یوم آزادی جوش و خروش سےمنایاگیا، تقریبات اور ریلیز منعقد

35 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

شگر(عابدشگری)ملک بھر کی طرح ضلع شگر میں یوم آزادی پاکستان جوش وخروش سے منایا گیا ۔ اس سلسلے میں ماڈل ہائی سکول شگر سے ایک ریلی نکالی گئی ۔ ریلی کی قیادت ڈپٹی کمشنر شگر ولی خان کر رہے تھے جبکہ ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن حاجی ابراہیم ،اسسٹنٹ کمشنر شگر سید موسی بخاری،ڈی ایف او شگرسمیت تمام ضلعی اداروں کے سربراہوں اور بڑی تعداد میں شہریوں اور سکولوں کے طلباء نے شرکت ہوئے۔ طلباء اپنے ہاتھوں میں پاکستانی جھنڈے اٹھائے ہوئے تھے جبکہ ملی نغمے بھی گائے جارہے تھے۔ریلی حسن شہید چوک تک آئے۔جہاں سکول کے سکاؤٹس کی جانب سے قومی پرچم کو سلامی دی گئی ۔ جبکہ تحریک آزادی پاکستان و بلتستان کے شہیدوں کے نام یاد گار شہداء پر پھول چڑھائے گئے۔اور فاتحہ خوانی کی گئی۔ اس موقع پر ملک عزیز پاکستان کی استحکام کیلئے خصوصی دعا بھی کی گئی ۔

آج ہمیں پھر سے بحیثیت قوم بننے کی ضرورت ہیں۔ورنہ پاکستان بنانے کا اصل مقصد فوت ہوجائے گا۔نفرتوں کو ختم کرکے ہم میں سے ہر ایک کو اس ملک کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کرنے کی ضرورت ہیں۔آزادی ایسے ہی نہیں ملی اس کیلئے ہمارے آباؤ و اجداد نے بڑی قربانیاں دی۔اس آزادی کی قدر کریں اور بحیثیت آزاد قوم دنیا میں نام پیدا کریں ان خیالات کا اظہار یوم آزادی پاکستان کی مرکزی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر شگر ولی خان،ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن شگر حاجی محمد ابراہیم ،سابق صوبائی وزیر راجہ محمد اعظم خان و دیگر نے کہا۔مقررین کا کہنا تھا کہ آزادی ایک بڑی نعمت ہے ۔جس کی قدر کشمیر یوں سے پوچھے جس ہندوستان کی ظلم و بربریت کا شکار ہے ان کی ناموس محفوظ نہیں۔ڈوگرہ راج میں ہمیں آباؤ و اجدا پر ظلم کی انتہاء ہوتی تھی۔تاہم انہوں نے اپنے بزور بازو ڈوگروں کا بھگا کر آزادی حاصل کی ہمیں اس موقع پر ان شہیدوں اور غازیوں کو بھی یاد رکھنے کی ضرورت ہیں۔جنہوں نے بڑی قربانیاں دیکر اس ملک کو حاصل کیا۔قائد اعظم اور ان کے رفقاء نے اس ملک کو ایک فلاحی مملکت کے طور پر حاصل کیا تھا تاہم آج دہشت گردی کی وجہ سے پاکستان وہ نہیں رہا جس کی بنیاد کلمہ طیبہ پر رکھا تھا۔لیکن آج ہمیں پھر سے بحیثیت قوم بننے کی ضرورت ہیں۔ورنہ پاکستان بنانے کا اصل مقصد فوت ہوجائے گا۔نفرتوں کو ختم کرکے ہم میں سے ہر ایک کو اس ملک کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کرنے کی ضرورت ہیں۔آزادی ایسے ہی نہیں ملی اس کیلئے ہمارے آباؤ و اجداد نے بڑی قربانیاں دی۔اس آزادی کی قدر کریں اور بحیثیت آزاد قوم دنیا میں نام پیدا کریں ۔

شگر(نامہ نگار)صدر علمائے امامیہ شگر سید طہ الموسوی شمس الدین نے یوم آزادی پاکستان کے موقع پر تمام اہل وطن کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے ۔آزادی ایک عظیم نعمت ہے۔اس ملک ہمارے اسلاف و بزرگان نے اسلام کے نام پر حاصل کیا اور ایک اسلامی فلاحی مملکت کی بنیاد رکھا۔اسلامی فلاحی ریاست میں اسلامی قوانین کا نفاذ ضروری ہے۔ایک اسلامی فلاحی مملکت میں بسنے والے تمام شہریوں کے حقوق برابر ہوتے ہیں ان شہریوں اور لوگوں کی جان و مال ،ناموس،عزت کی حفاظت ریاست کی ذمہ داری ہے جبکہ بنیادی ضروریات ،مذہبی ،لسانی اور عبادات کی آزادی بھی اس زمرے میں آتا ہے۔مغرب کی آزادی اور اسلام میں�آزادی کا مفہوم الگ الگ ہیں۔ہمارے آباؤ و اجداد نے اس ملک کو مغربی طرز پر نہیں بلکہ اسلام کی بنیاد پر حاصل کیا۔اور اسلام امن کا مذہب ہے۔۔جو دہشت گرد ملک میں اپنے مذموم عزائم کے حصول کیلئے ملک میں انتشار پھیلارہے ہیں وہ اس ملک کے غدار اور غیروں کے اشارے پر اس ملک کو کمزور کرنے کی پالیسی پر گامزن ہے۔لیکن وہ کبھی کامیاب نہیں ہوگا کیونکہ جس ملک کی بنیاد اسلام اور کلمہ طیبہ پر ہو اس ملک کی حفاظت کی ذمہ داری بھی اللہ تعالی کی ہے۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔