ضلع شگر میں میں ہزاروں سال پرانی تہوار جشن مے فنگ جوش و خروش سے منایا گیا

شگر(عابدشگری) ہماری ثقافت ہماری پہچان ہے۔زندہ قومیں اپنے ثقافت کو ہمیشہ زندہ رکھتے ہیں یہ نہایت خوش آئند بات ہے کہ شگر کے لوگ اپنے ثقافت کو زندہ رکھے ہوئے ہیں۔ ان خیالات کا اظہارکمشنر بلتستان حمزہ سالک ،ممبر اسمبلی عمران ندیم ،ڈی آئی جی فرمان علی ،ڈی سی ذاکر حسین ،مسلم لیگ (ن) کے سیکریٹری جنرل رضوان اللہ اور وزیر جعفر نے جشن مے فنگ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا۔

ڈسٹرکٹ انتظامیہ شگر،شگر ٹورزم ایسوسی ایشن اور محکمہ ٹورزم،محکمہ ایل جی آر ڈی،ڈسٹرکٹ کونسل،شگر ٹاؤن منیجمنٹ سوسائٹی کی تعاؤن سے گلگت بلتستان کے ضلع شگر میں میں ہزاروں سال پرانی تہوار جشن مے فنگ جوش و خروش سے منایا گیا۔

اس تہوار کو دیکھنے کیلئے کمشنر بلتستان عاصم ایوب،ممبراسمبلی عمران ندیم،ڈی آئی جی بلتستان فرمان علی،ڈی سی شگر ذاکر حسین ایس پی سید الیاس،ڈپٹی ڈائریکٹر ایل جی اینڈ آر ڈی ثناء اللہ،چیف آفیسر ڈسٹرکٹ کونسل سجاد حسین،ایگزیکٹیو انجینئر پاور شاکر حسین،ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن نذیر شگری،صدر پریس کلب سکردو محمد حسین آزاد سمیت ہزاروں کے تعداد میں تماشائی موجود تھے۔

یہ تہوار ہر سال21 دسمبر کی قریب ترین جمعہ کو منایا جاتا ہے ۔ اس سال ایک حادثے کی وجہ سے اسے ملتوی کیا گیا تھا تاہم گذشتہ دنوں مے فنگ کا تہوار شگر میں جوش و خروش اورروایتی انداز سے طریقے سے منایا گیا۔مغرب کے اذان کے بعد قریبی پہاڑوں سے جوان اور بچے ہاتھوں میں ڈنڈا مشعل لیکر نیچے اترے اور پولو گراؤنڈ میں جمع ہوکر مشعل ہوا میں لہرائے جبکہ مختلف ٹیموں کی جانب سے فضا میں فانوس چھوڑا گیا۔جشن مے فنگ کو دیکھنے کیلئے شگر اور سکردو سے سینکڑوں افراد شاہی پولوگراؤنڈ میں جمع تھے۔ اور اس قدیمی اور روایتی تہوار سے لطف اندوز ہوئے۔ اس سے پہلے دن میں کلی مل ہورچس اور مرکنجہ کے درمیان شگر کا قدیمی اور روایتی کھیل” کو پولو “کھیلا گیا جس میں مرکنجہ ٹیم نے کلی مل ہورچس کی ٹیم شکست دیکر کامیابی حاصل کی۔

جشن کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ زندہ قومیں اپنے ثقافت کو زندہ رکھتے ہیں یہ نہایت خوش آئند بات ہے کہ شگر کی لوگ اپنے ثقافت کو زندہ رکھے ہوئے ہیں۔شگر کی سرزمین زندہ دلان لوگوں کی سرزمین ہے۔یہ ثقافت ہماری پہچان ہے اور ان کو زندہ رکھنا زندہ لوگوں اور قوموں کی نشانی ہے۔ شگر کی سرزمین ہمیشہ سے ادب اور ثقافت کا گہوارہ رہا ہے۔اور شگر کی عوام اپنے ثقافت کو زندہ رکھنے کیلئے ہمیشہ کوشاں رہتے ہیں۔یہ انتہائی خوش آئند بات ہے۔گلگت بلتستان کی حکومت یہاں کی ثقافت کو زندہ رکھنے کیلئے اقدامات کرنے کیساتھ نوجوانوں کو کھیل اور صحت افزاء مواقع فراہم کرنے میں کوشاں ہیں۔ شگر انتظامیہ آئندہ ایسے پروگرامز کو قائم اور زندہ رکھنے کیلئے بھرپور تعاؤن کرینگے۔

اس سے پہلے خطاب کرتے ہوئے شگر ٹورزم ایسوسی ایشن شگر کے چیئرمین وزیر جعفر نے جشن مے فنگ کی تقریب دیکھنے آئے تمام مہمانوں اور میڈیا کے نمائندوں کا شکریہ ادا کیا اور اس تہوار کو آئندہ بھی شایان شان طریقے سے منانے کے عزم کا اظہار کیا۔جبکہ انہوں نے کمشنر بلتستان اور ممبر اسمبلی پر زور دیا کہ چھومک سے شگر روڈ کو 85فٹ چوڑا رکھا جائے۔ تاکہ مستقل میں اس روڈ پر کوئی تجاوزات نہ قائم کرسکے۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments