گرمی کی شدت میں مسلسل اضافہ، التر اور حسن آباد نالے میں‌پانی کا بہاو خطرناک حد تک بڑھ گیا، سربند ٹوٹنے سے آبپاشی کا نظام متاثر

ہنزہ ( اجلال حسین )گزشتہ کئی دنوں سے ہنزہ میں گرمی کی شدت بڑھ رہ یہے، گلشیرز اور برف کے پگھلنے کا عمل تیز ہونے سے التر160 اور حسن آباد نالے میں پانی کا بہاو خطرناک حد تک بڑھ گیا ہے، اور سیلابی کیفیت پیدا ہوگئی ہے، جس کے باعث ،سنٹرل ہنزہ کے علاقوں التت، گنش، کریم آباد، گرلت، ڈورکھن، حیدر آباد اور ہیڈ کواٹر علی آباد کو آبپاشی اور پینے کا پانی فراہم کرنے والے مین واٹر چینلز کے سربند کو برُی طرح نقصان پہنچاہے۔

مقامی افراد نے کہا کہ سربند ٹوٹنے سے فصلوں اور درختوں کو شدید خطرات لاحق ہے۔

دوسری جانب سربند کی مرمت کر کے پانی بحال کرنے کے لئے ضلعی انتظامیہ، ڈسٹرکٹ ڈیزاسٹر منجمنٹ کے حکام اورعلاقے کے عوام التر اور حسن آباد نالوں میں پانی کو بحال کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں مگر گرمی کی شدت میں اضافہ ہونے کی وجہ سے مسلسل ان نالوں میں سیلابی کیفیت جاری ہے، جسکی وجہ سے سربند سے پانی دوبارہ جاری کرنے کی کوششوں میں مشکلات پیش آرہی ہیں۔

گزشتہ روز ڈپٹی کمشنر ہنزہ کپٹن (ر) سید علی اصغر ، اے سی ہنزہ ڈاکٹر انس اور ڈیزسٹر منجمنٹ اتھارٹی کے ڈی ڈی غفران اللہ بیگ نے التر اور حسن آباد نالے کا معائینہ کیا جہاں پر کام کرنے والے مقامی رضاکاروں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے ایکسکویٹر کی فراہمی کے علاوہ بڑے بڑے پتھر کے لئے بارودی سامان مہیا کر دیا۔

انہوں نے مقامی رضاکاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ضلعی انتظامیہ اس مشکل گھڑی میں عوام کے ساتھ ہے۔ ہم سب کوشش کرینگے کہ نالوں سے جلد پانی کی بحال کو یقینی بنائے گے اور فصلوں تک پانی پہنچانے میں ہر فرد اپنا کردار ادا کرے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایسے آفات انسان کے بس میں نہیں ہوتے یہ قدرت کا نظام ہے اس میں ہم سب کو اللہ کے حضور دعا گو ہے کہ اللہ تعالی ایسے آفتوں سے ہمیں دور رکھے۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments