چترال، برفانی تودے کے نیچے دب کر جان بحق ہونے مزید دو طالب علموں کی نعشیں نکال لی گئی

چترال، برفانی تودے کے نیچے دب کر جان بحق ہونے مزید دو طالب علموں کی نعشیں نکال لی گئی

7 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

چترال ( بشیر حسین آزاد ) اتوار کے روز سوسوم میں نو دن پہلے برف کے تودے کے نیچے دب کر جان بحق ہونے والے دو طالب علموں کی نعشین نکال لی گئیں ۔ ان نعشوں کی شناخت عمران الدین ولد فضل علی ساکن گری اور عمرالدین ولد عصمت الدین ساکن اجراندہ پرسان کے ناموں سے ہوئی ۔ لاش کی بازیابی کے بعد رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے ۔ حادثے کے موقع پر موجود تحصیلدار گل فراز نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ۔ کہ گذشتہ رات دو پائپ کے ذریعے پانی کو برف ہٹانے کیلئے استعمال کیا گیا ۔ جو کہ کامیاب رہا ۔ رات بھر پائپ کا پانی برف کو بہا کر لے گیا ۔ اور صبح جب موقع پر دیکھا گیا ۔ تو طالب علموں کی نعشیں نظر آرہی تھیں ، جنہیں نکال کر ورثا کے حوالے کیا گیا ۔ اس کے بعد سے مقامی لوگوں اور فورسز کی کاروائیوں میں تیزی آئی ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ اتوار کے روز پانچ سو افراد نے متاثرہ مقام پر کام کیا ۔ اور بڑی حد تک برف کو بہا دیا گیا ہے ۔ گلفراز نے کہا ۔ کہ دو اسکیویٹر اور ٹریکٹر موقع پر موجود ہیں ۔ لیکن اُن کے استعمال میں مشکلات پیش آرہی ہیں ۔ کیونکہ جگہ بہت تنگ ہے ۔ انہوں نے کہا، کہ کام کے دوران امدادی کارکنوں کو دن کا کھانا ضلعی انتظامیہ کی طرف سے دی جارہی ہے ۔ جبکہ آرمی اور چترال سکاؤٹس کے انتظامات الگ ہیں ۔ انہوں نے کہا کمیونٹی نے بھی امدادی کارکنوں کی بہت مہمان نوازی کی ۔ گل فراز نے امید کا اظہار کیا ۔ کہ کل مزید نعشیں بر آمد ہونے کی توقع کی جارہی ہے۔ واضح رہے ، کہ 19مارچ کے روز آٹھ طالب علم سو سوم ہائی سکول میں امتحانی پرچہ دینے کے بعد جب اپنے گھروں کو واپس جارہے تھے ۔ کہ بارش کے دوران پہاڑی راستے میں اُن پر پرفانی تودہ گرا ۔ جس پر آٹھ طالب علم اور ایک دوسرا شخص لاپتہ ہو گئے ۔ تاہم دوسرے دن طالب علم مبشر اور جماعت بائے کی نعش نکا ل لی گئی تھی ۔ جبکہ دیگر سات طالب علموں کی تلاش گذشتہ نو دن سے جاری ہے ۔ اور اُس میں این ڈی ایم اے کی اسپشلائزڈ ٹیم کے بارہ ارکان سمیت چترال سکاؤٹس ، چترال پولیس ، بارڈر پولیس اور کمیونٹی کے سینکڑوں افراد حصہ لے رہے ہیں ۔ نو دن بعد دو طلباء کی نعشیں اتوار کی صبح نکال لی گئیں ۔ اس دوران جی او سی ملاکنڈ ڈویژن جنرل نادر خان ، کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس ، ڈپٹی کمشنر چترال نے دو سے تین مرتبہ جائے وقوعہ کا دورہ کیا ۔ مقامی کمیو نٹی کی طرف سے ممبر ڈسٹرکٹ کونسل کریم آباد محمد یعقوب نے پاک آرمی ، چترال سکاؤٹس ، پولیس ، لیویز سمیت تمام اداروں کے سربراہوں اور جوانوں کا شکریہ ادا کیا ہے ۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔