کھوار سمیت چترالی زبانوں کو مردم شماری فارم میں نظر انداز کرنا زیادتی ہے، پی آئی سی ایل

کھوار سمیت چترالی زبانوں کو مردم شماری فارم میں نظر انداز کرنا زیادتی ہے، پی آئی سی ایل

15 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

چترال (بشیر حسین آزاد) گزشتہ روز دروش میں ادارہ برائے تحفظ مقامی زبان وثقافت (پی آئی سی ایل) کے دفتر میں چترال میں بسنے والے مختلف زبانوں سے تعلق رکھنے والے عمائدین کا ایک اہم اجلاس صلاح الدین طوفان کی زیر صدارت منعقد ہوا۔اجلاس کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا۔اجلاس کو بتایا گیا کہ حالیہ مردم شماری میں چترال میں بولے جانے والی کسی بھی زبان کے لئے خانہ مختص نہیں کیا گیا جوکہ سراسر ظلم اور ناانصافی ہے اور ساتھ ساتھ چھوٹی زبانوں کو یکسر نظر انداز کرنا ایک المیہ بھی ہے لہذا ہم اس اجلاس کی وساطت سے حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ حالیہ متوقع مردم شماری میں چترال میں بسنے والے مختلف لوگوں کے زبانوں کے لئے بھی خانہ مختص کرکے ہمارے اندر پیدا ہونے والے احساس محرومی کو ختم کیا جائے۔اجلاس میں صلاح الدین طوفان،عمران الملک،اعجاز احمد اعجاز(چیئرمین پی آئی سی ایل) میر حاجی خان،ملک امان اللہ خان،خاطر خان علی اور محمد خان وغیرہ شریک تھے۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔