پیپلز پارٹی چترال کے نائب ضلعی صدر نے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر لی

چترال (بشیر حسین آزاد) چترال میں پاکستان پیپلز پارٹی کو شدید دھچکا۔ ضلعی نائب صدر محمد وزیر نے پی پی پی چھوڑ کر پاکستان تحریک انصاف میں باضابطہ شمولیت کا اعلان کیا ۔ وادی یارخون کے اہم سیاسی شخصیت اور پی پی پی کے ضلعی نائب صدرسابق یوسی ناظم محمد وزیر خان نے ہفتے کے روز چترال پریس کلب میں پی ٹی آئی کے ضلعی صدرنامزد امیدوار برائے این اے ون عبد اللطیف،جنرل سیکرٹری نامزد امیدوار برائے پی کے ون اسرارصبور اور بڑی تعداد میں پاکستان تحریک انصاف کے ورکروں کی موجودگی میں کیا۔پاکستان پیپلز پارٹی سے اپنی 35سالہ رفاقت چھوڑنے کے وجوہات بیان کرتے ہوئے محمد وزیر خان نے کہا کہ پیپلز پارٹی اب وہ پارٹی نہیں رہی جو بھٹو خاندان کا تھاا س وقت پارٹی میں ورکروں کی بڑی اہمیت تھی۔طاقت کا سر چشمہ عوام کو سمجھا جاتا تھا۔اب مفاد پرست دولت کو طاقت کا سر چشمہ سمجھنے لگے ہیں۔جن کا کوئی سیاسی پس منظر نہیں ایسے لوگ نا جائزدولت کے بل بوتے پر پیپلز پارٹی پر قبضہ کئے ہوئے ہیں نظریاتی کارکنوں کو چھوڑ کر دولت کے زریعے الیکشن مہیم چلارہے ہیں۔اُنہوں  نے کہا کہ میں پینتیس سالوں سے پاکستان پیپلزپارٹی میں تھا اب ضلعی، صوبائی اور مرکزی قیادت کے غلط پالیسیوں سے مایوس ہو کر پاکستان تحریک انصاف میں شامل ہوا۔انہوں نے کہا کہ صرف میں ہی نہیں پی پی پی کے تمام نظریاتی کارکن پارٹی چھوڑنے پر مجبور ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ بھٹو ازم روٹی، کپڑا اور مکان ہے لیکن پی پی پی اس سے پیچھے ہٹ گئی ہے۔محمد وزیر خان نے کہاکہ جن لوگوں کے خلاف چترال کے جیالے کرپٹ کے نعرے لگاتے تھے آج اُن لوگوں کوپارٹی ٹکٹ دے کرسامنے لایا گیاہے ۔پی پی پی کے بنیادی ورکرمایوس ہوکردوسرے جماعتوں میں جانے کارخ کررہے ہیں۔اُنہوں نے پاکستان تحریک انصاف کے قائد عمران خان کی پالیسیوں پر بھر پور اعتماد کا اظہار کیا۔پی ٹی ۤئی کے ضلعی صدر عبد اللطیف نے پارٹی میں اُنہیں خوش آمدید کہا اور اُن کی شمولیت کو پارٹی کے لئے بہت بڑی قوت قرار دیتے ہوئے کہا کہ محمد وزیر خان کی پارٹی میں شمولیت کا ابھی ۤغاز ہوا ہے مستقبل قریب میں پیپلز پارٹی کے مزید لیڈران بھی پی ٹی ۤئی میں شمولیت کا اعلان کرینگے۔ اس موقع پر اُنہیں پارٹی کی ٹوپی پہنائی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments