بائیولوجی کا پروفیسر نہ ملنے پر ڈگری کالج چلاس کے طلبا بپھر گئے، کالج کی تالا بندی، بعد میں ڈپٹی کمشنر کی یقین دہانی پر احتجاج دو دنوں کے لئے موخر کردی

بائیولوجی کا پروفیسر نہ ملنے پر ڈگری کالج چلاس کے طلبا بپھر گئے، کالج کی تالا بندی، بعد میں ڈپٹی کمشنر کی یقین دہانی پر احتجاج دو دنوں کے لئے موخر کردی

16 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

چلاس(مجیب الرحمٰن)اساتذہ کی عدم تعیناتی ،ڈگری کالج چلاس کے طلباء نے احتجاجاً کالج کی تالہ بندی کی۔اور ڈپٹی کمشنر ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی اور دھرنا دیدیا۔طلباء نے سیکرٹری ایجوکیشن ،ڈائریکٹر کالجز،پرنسپل کے خلاف زبردست نعرے بازی کی۔ڈپٹی کمشنر دیامر عثمان احمد خان نے طلباء سے مذاکرات کئے اور انکے مطالبات سنے۔ڈپٹی کمشنر دیامر نے طلباء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دیامر کے طلباء نے آج تعلیم کی فروغ کے لئے احتجاج کیا ہے۔جس پر بے حد خوشی ہوئی ہے۔آئندہ اٹھتالیس گھنٹوں میں بیالوجی کا پروفیسر کالج میں حاضر ہو جائے گا۔جلد ہی ڈگری کالج کا دورہ کر کے تمام مسائل حل کردینگے۔تعمیراتی کام کے حوالے سے ایکسئین کو ڈگری کالج بلایا جائے گا۔کالج کے طلباء کے لئے مطالعاتی دورے کے لئے تیس ہزار اضافی فنڈ دیا جائے گا۔طلباء نے ڈپٹی کمشنر کی یقین دہانی پر احتجاج دو دن کے لئے موٗخر کر دی۔

 

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔