اشکومن کو اگلے ڈیڑھ سال کے اندر سب ڈویژن بنایا جائے گا:  وزیر اعلیٰ

اشکومن کو اگلے ڈیڑھ سال کے اندر سب ڈویژن بنایا جائے گا: وزیر اعلیٰ

25 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

اشکومن(کریم رانجھا) ؔ تحصیل اشکومن کے مسائل دیکھ کر لگتا ہے کہ گزشتہ ستر سالوں میں کوئی توجہ نہیں دی گئی،1998اور 2004کے منصوبے آج ہم مکمل کررہے ہیں،اداروں کی ری سٹرکچرنگ کررہے ہیں جس کے حوصلہ افزاء نتائج برآمد ہوئے،صوبے بھر میں 47آرسی سی پلوں پر کام کا آغاز ہوچکا ہے،سول ہسپتال چٹورکھنڈ کو 20بیڈ،ایمت کو نیابت کا درجہ ، اور اشکومن کو اگلے ڈیڑھ سال کے اندر سب ڈویژن بنایا جائے گا،ان خیالات کا اظہار وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمٰن نے یہاں چٹورکھنڈ ریسٹ ہاؤس میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ ایمت تا مترم دان ٹرک ایبل روڈ کے لئے آٹھ کرو ڈ روپے مختص کئے گئے ہیں ،دائین آر سی سی پل کو آئندہ جون میں اے ڈی پی کا حصہ بنائیں گے،کانچے تا گشگش روڈ کی مرمت کے لئے متعلقہ محکمے کو فوری ہدایات جاری کردیں۔وزیر اعلی نے کہا کہ 8جون 2018کو انٹر کالج چٹورکھنڈ کی تعمیر مکمل ہو گی اور میں خود اس کا افتتاح کروں گا۔

اپنی حکومت کی کارکردگی کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) نے برسر اقتدار آنے کے بعد گلگت بلتستان میں لاء اینڈ آرڈر کی صورتحال کو بہتر بنایا اور آج گلگت بلتستان ایشیاء بھر میں سو فیصد پر امن علاقہ ڈیکلےئر ہوا ہے۔امن وامان کے حالات بہتر ہونے سے اس سال سترہ لاکھ سیاحوں نے گلگت بلتستان کا رخ کیا ،ان کی حکومت نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کے لئے بھر پور اقدامات کررہی ہے اس سلسلے میں سیاحت سے وابستہ افراد کے لئے ہٹس کی تعمیر کے لئے سات لاکھ روپے تک کی رقم بلا سود فراہم کی جائے گی۔مسلم لیگ کی حکومت نے قانون سازی کے ذریعے غریبوں کا معاشی استحصال روکنے کے لئے پرائیوٹ افرادکا سود پر رقم دینے کو قابل دست اندازی پولیس قرار دیا ہے اور آئندہ اس کاروبار سے منسلک افراد کو سزائیں دی جا سکیں گی اس کے علاوہ دہقانی نظام کے خاتمے کے لئے بھی اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ SAPسکولز کے اساتذہ کو اگلے دو مہینوں کے اندر اندر مستقل کیا جائے گا۔

قبل ازیں معزز مہمانان کے ریسٹ ہاؤس پہنچنے پر ننھی بچیوں نے پھولوں کے گلدستے پیش کئے عوام علاقہ کی جانب سےمہمان خصوصی کو چغہ پہنا یا گیا جبکہ دیگر مہمانان کو روایتی ٹوپی پیش کی گئی۔ مسلم لیگ (ن) کے سابق امیدوار قانون ساز اسمبلی حلقہ 1راجہ شکیل احمد نے اپنے خطاب میں علاقے کے مسائل کے بارے میں مہمان خصوصی کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ اشکومن پسماندہ ضلع کا پسماندہ ترین تحصیل ہے جس میں عوام کو کوئی بنیادی سہولت دستیاب نہیں ۔مسلم لیگ (ن) کی حکومت سے عوام کو امیدیں وابستہ ہیں ۔

تقریب میں ڈپٹی سپیکر جعفرالللہ،تعمیرات کے وزیر ڈاکٹر اقبال،وزیر سیاحت فدا خان ودیگر موجود تھے۔

وزیر اعلیٰ مقررہ وقت سے پانچ گھنٹے تاخیر سے چٹورکھنڈ پہنچے ،انٹر کالج چٹورکھنڈ کی بچیوں کو شام پانچ بجے تک روکے رکھا گیا ،وقت کی کمی کی وجہ سے وزیر اعلی کالج نہ جاسکے ۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان کی آمد کا وقت صبح دس بجے مقرر تھا جس کے لئے تمام انتظامات مکمل تھے لیکن وزیر اعلی تین بجے چٹورکھنڈ ریسٹ ہاؤس پہنچے ،انٹر کالج چٹورکھنڈ وزٹ کا پروگرام تھا جس کے لئے کالج کے طلبہ وطالبات کو صبح سے شام تک انتظار کروایا گیا لیکن وقت کی کمی کے باعث وزیر اعلٰی ہسپتال کا مختصر دورہ کر کے واپس روانہ ہوگئے۔

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔