اشکومن: طالب علم کو جنسی تشدد کے بعد قتل کرنے والے ملزمان نےاقرارجرم کادیا

غذر (رپورٹر) اشکومن میں کلاس ہفتم کے طالب علم کو جنسی تشدد کے بعد قتل کرنے والے چار ملزمان نے اپنے جرم کا اقرار دیا۔ سازش تیار کرنے والا ملزم بھی پولیس نے گرفتار کرلیا۔ ایس ایس پی غذر سلطان فیصل نے گاہکوچ میں میڈیا سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ اشکومن تشنالوٹ میں کلاس ہفتم کے طالب علم دیدار حسین کے ساتھ جنسی تشدد اور قتل کرنے والے تمام ملزمان کو پولیس نے گرفتار کرکے ان کے خلاف 377،302اور34ت پ کا مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ہے۔

تمام ملزمان کو تھانہ چٹورکھنڈ منتقل کر دیا گیا جہاں اس اہم کیس کی تفتیش سب انسپکٹر سعادت علی کر رہے ہیں۔ چار ملزمان کو جائے وقوعہ لے جایا گیا جہاں انھوں نے کلاس ہفتم کے طالب علم کے ساتھ جنسی تشدد کے بعد قتل کر دیا تھا۔ انھوں نے کہا کے دو ملزمان نے مقتول کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا جبکہ دو نے مفلرسے ان کا گلا دباکر قتل کر دیا اور اس کیس کا پانچواں اور اہم ملزم جس نے یہ سازش تیار کی تھی اس کو بھی پولیس نے گرفتار کرکے تفتیش شروع کر دی ہے۔

اس جرم میں ملوث تمام ملزمان کو پولیس نے گرفتار کرلی اور ملزمان کے خلاف کارروائی مکمل کرنے کے بعدان کو جوڈیشل کیا جائے گا۔ اس کیس کی تفیش کے لئے ڈی ایس پی لیاقت علی کی نگرانی میں سب انسپکٹرسعادت علی کو خصوصی طور پر یہ اہم کیس سونپ دی تھی جس نے بہت ہی کم ٹائم میں ملزمان تک پہنچنے میں کامیابی حاصل کی۔ ملزمان کے خلاف سخت سے سخت سزا کے لئے پولیس اپنی تمام کارروائی مکمل کرکے ملزمان کا چالان عدالت میں پیش کرےگا۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments