ہندراپ کے باشندوں‌کو اغوا کرنے اور ان پر جھوٹے مقدمات درج کرنے کےخلاف 22 جولائی کو غذر کو جام کردیں‌گے، ظفر محمد شادم خیل

گوپس(بیورو رپورٹ) پاکستان پیپلز پارٹی غذر کے صدر ظفر محمد شادم خیل نے گوپس دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ 22 جولائی کو غذر جام کردیں گے۔ہمارے معصوم بچوں کو پہلے اغوا کیا پھر ان کے خلاف جعلی مقدمہ بناکر جیل بھیج دیا یہ ناقابل برداشت ہے۔ ہم پانچ دن سے اپنے بچوں کو بازیاب کرنے کے لئے سڑکوں پر ہیں اور آج ہمیں یہ خبر دی جاتی ہے کہ اب کے خلاف مقدمہ بنایا گیا ہے۔کوہستان پولیس نے ظالم کو مظلوم اور مظلوم کو ظالم بناکر پیشں کردیا۔ہمارے ساتھ یہ مذاق بند کردیا جائے۔ہمارے مطالبات حل ہونے تک دھرنہ دیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ریاستی اداروں پر اعتماد ختم ہوچکا ہے اب ہم زندہ باد کے نعرے نہیں لگائیں گے۔ہاں ہم اس وقت زندہ باد کے نعرے لگائیں گے جس وقت ہماری جان اور مال محفوظ ہوگا، ہماری عزتیں محفوظ ہوں گی ہم سکون سے اپنے گھروں میں رہیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر فدا خان فدا غلام محمد جہانزیب اور نواز خان ناجی اس دھرنے میں نہیں آئے تو سب سے بڑے غدار یہ لوگ ہوں گے۔آج گوپس میں علامتی دھرنا ہوگا اور 22 جولائی کو پورا غذر جام ہوگا عوام کو لیکر گاہکوچ میں دھرنا دیں گے اگر ضرورت پڑی تو ہم یو این او کے دفتر کے سامنے جاکر دھرنا دیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments