ہم کب سمجھیں گے؟؟

بقلم:ایڈوکیٹ حیدر سلطان ایک وقت تھا جب گلگت میں شیعہ سنی فسادات ہوتے تھے۔ٹارگٹ کلنگز ہوتی تھیں ۔ جانے انجانے میں عام آدمی بھی مخالف مسلک کے بے گناہ لوگوں کے قتل کو جائز سمجھنے لگا تھا۔ رشتہ داروں سے مزید پڑھیں