گلگت: بگ سٹی کے دعوے، لیکن سرما کی پہلی بارش کے بعد شہرکی حالت ناگفتہ بہہ

گلگت: بگ سٹی کے دعوے، لیکن سرما کی پہلی بارش کے بعد شہرکی حالت ناگفتہ بہہ

8 views
0
Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+
OLYMPUS DIGITAL CAMERA

جی نہیں. یہ کوئی ندی یا نالہ نہیں. بلکہ گلگت کے وسطہ سے گزرنے والی ایک سڑک کا منظر ہے

گلگت(فرمان کریم بیگ) گلگت اور سکرود کو بگ سٹی قرار دیئے پانچ سال کا عرصہ ہوا لیکن بگ سٹی کا صرف نام سننے میں آتا ہے۔ بارش کے بعد بگ سٹی کی حقیقت سامنے آتا ہے۔ جب بھی باراں رحمت ہوتی ہے۔ گلگت شہر تالاب کا منظر پیش کرتا ہے ۔ ڈرینج سسٹم نہ ہونے سے بارش کا پانی مرکزی شاہراہوں پر جمع ہوتا ہے۔ جس کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہوتا ہے۔۔ پیر کے روز صبح سویرے شروع ہونے والی موسلادار بارش نے بھی گلگت شہر کو تالاب بنادیا۔ 8 گھنٹے سے زاہدجاری رہنے والی بارش کی وجہ سے شہر کے مرکزی شاہرائیں تالاب کا منظر پیش کرنے لگے۔

شاہراہ قائد اعظم کا ایک منظر

شاہراہ قائد اعظم کا ایک منظر

ایئر پورٹ روڈ ، نگرل روڈ، کنوداس روڈ، سمت شہر کے مرکزی شاہراہوں میں نکاسی آب کا نظام نہ ہونے سے بارش کا پانی سٹرکوں پر جمع رہا۔کنوداس کے اطراف پہاڑوں سے پانی کا زیادہ بہاو ہونے سے وہاں کے مکینوں میں خوف حراس رہا۔ پہاڑوں سے پانی کے بہاو سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ پانی کے بہاو سے گھروں میں پانی داخل ہوا۔ سکارکوئی سے نگر کالونی تک مرکزی شاہراہ میں جگہ جگہ پانی کھڑا ہونے سے سکول کے طلبہ سمت دیگر عوام کو چلنے میں شدید مشکلات کا سامنا رہا۔ موسلادار بارش کی وجہ سے تعلیمی اداروں سمتسرکاری اداروں میں حاضری کم رہی۔ جبکہ بازار میں بھی رش معمول سے کم رہی۔

گلگت بلتستان قانون ساز اسملی کے سامنے سڑک کا منظر

گلگت بلتستان قانون ساز اسملی کے سامنے سڑک کا منظر

شہرکی تقریبا ساری سڑکیں تالاب کا منظر پیش کر رہی تھیں

شہرکی تقریبا ساری سڑکیں تالاب کا منظر پیش کر رہی تھیں

Share on FacebookTweet about this on TwitterShare on LinkedInPin on PinterestShare on Google+

آپ کی رائے

comments

About author

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔