اہم ترین

12 سالہ لڑکی نےمبینہ طور پر پھندا لگا کر خودکشی کرلی

اشکومن(کریم رانجھا) بارہ سالہ بچی نے مبینہ طور پر پھندا لگا کر خود کشی کرلی۔پولیس نے نعش پوسٹمارٹم کے لۓ سول ہسپتال منتقل کردی جہاں ڈاکٹر کی عدم موجودگی کے سبب لواحقین سات گھنٹوں تک انتظار کرتے رہے بعد ازاں اشکومن پراپر سے ڈاکٹر بلوا کر پوسٹ مارٹم کے بعد نعش ورثا کے حوالے کردیا گیا۔

گزشتہ روز گاٶں کوچدہ کی رہاٸشی مسمات ن دختر محمد شکور عمر بارہ سال نے گھر سے متصل باتھ روم میں مبینہ طور پر گلے میں پھندا ڈال کر زندگی کا چراغ گل کردیا۔اطلاع ملنے پر پولیس تھانہ چٹورکھنڈ نے نعش سول ہسپتال چٹورکھنڈ منتقل کردیا۔ہسپتال میں ڈاکٹر موجود نہ تھا جس باعث متوفیہ کے ورثا سات گھنٹوں تک انتظار کرتے رہے۔

علاقے میں دس روز کے اندر لڑکی کی خودکشی کا دوسرا واقعہ ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments

پامیر ٹائمز

پامیر ٹائمز گلگت بلتستان، کوہستان اور چترال سمیت قرب وجوار کے پہاڑی علاقوں سے متعلق ایک معروف اور مختلف زبانوں میں شائع ہونے والی اولین ویب پورٹل ہے۔ پامیر ٹائمز نوجوانوں کی ایک غیر سیاسی، غیر منافع بخش اور آزاد کاوش ہے۔

متعلقہ

Back to top button
%d bloggers like this: