چترال میں شادی کے لئے دیواروں پر اشتہار چسپاں والا روسی شہری گرفتار، تحقیقات شروع

چترال (محکم الدین) چترال پولیس نے جمعرات کے دن ایک غیر ملکی مشکوک شخص کو اپنی تحویل میں لے لیا ہے ۔ جس کا تعلق ماسکو روس سے ہے ۔ مذکورہ شخص مقامی لوگوں کے بیس میں 29 مارچ کو چترال پہنچا ۔ اور انہوں نے چترال میں شادی کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے اردومیں ایک اشتہار چترال کے مختلف مقامات میں چسپان کیا ہے، جس میں انہوں نے کہا ہے ۔ کہ وہ ایک مسلمان ہے اور ماسکو روس کا باشندہ ہے ۔ چترال میں شادی کرنے اور ایک گھر تعمیر کرنے کی خواہش رکھتا ہے ۔ اس روسی باشندے کا اصل نام APEGANS VIAHESLAXاور اسلامی نام TURUD ALIبتا یا گیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق اس شخص کے بارے میں جمعہ کے روز جی آئی ٹی میں فیصلہ کے بعد ہی مزید کاروائی کی جائے گی ۔ چترال پولیس نے مذکورہ شخص کے پاسپورٹ اور دیگر دستاویزت اپنی تحویل میں لے لی ہے ۔ اور اُس کو ہوٹل تک ہی محدود کر دیا ہے ۔ جہاں پولیس اُس کی نگرانی کر رہا ہے ۔ ذرائع نے بتایا ۔ کہ مذکورہ شخص نے شادی میں مدد دینے والے افراد کو دس لاکھ روپے معاوضہ دینے کا بھی اظہار کیا ہے ۔ تاہم شادی کا یہ اشتہار فی الحال اُس کے گلے پڑ گیا ہے ۔ اور اس نے پولیس اور سیکیورٹی کے دیگر اداروں کے اندر شکوک وشبہات کو جنم دے دیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق مذکورہ شخص ماہ دسمبر 2015میں بھی چترال آیا تھا ۔ جسے پولیس نے واپس بھیج دیا تھا ۔ اب ماہ مارچ میں ماسکو روس کی شہریت رکھنے والا 28سالہ نوجوان تورود علی دوبارہ چترال پہنچ چکا ہے ۔ تاہم سیکیورٹی ادارے اُس کے بارے میں تحقیقات کر رہے ہیں ۔ کہ آخر یہ روسی نوجوان چترال میں شادی کرنے اور گھر بنانے میں کیونکر اتنی دلچسپی لے رہا ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email

آپ کی رائے

comments